fbpx

کورونا وبا کے سبب عالمی قرضوں میں 24 کھرب ڈالر اضافہ ہو گیا، آئی ایم ایف

IMF

IMF

اسلام آباد (اصل میڈیا ڈیسک) آئی ایم ایف نے کہا ہے کہ کوویڈ 19 کی وبا کے باعث 2020ء کے دوران عالمی قرضوں میں 24 کھرب ڈالر اضافہ ہوا، مستقبل میں قرضوں کے بوجھ سے نمٹنے کے لیے سیاسی اور سماجی دباؤ کی وجہ سے قرضوں میں کمی کے حکومتوں کے اقدامات متاثر ہوسکتے ہیں۔

آئی ایم ایف (بین الاقوامی مالیاتی فنڈ) کی رپورٹ کے مطابق عالمی وبا کے دوران گزشتہ سال کے اختتام پر بین الاقوامی قرضوں کا حجم 281 کھرب ڈالر تک پہنچ گیا جس کے نتیجے میں عالمی سطح پر جی ڈی پی کے مقابلے میں قرضوں کی شرح 355 فیصد تک بڑھ گئی۔

رپورٹ کے مطابق عالمی قرضوں کے حجم میں نصف اضافہ حکومتی معاونت کے پروگرامز کے باعث ہوا، جبکہ بین الاقوامی کمپنیوں، بینکوں اور گھریلو اخراجات کے لیے قرضوں کے حجم میں بالترتیب 5.4 کھرب ڈالر، 3.9 کھرب ڈالر اور 2.6 کھرب ڈالر کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق گزشتہ سال کے دوران بین الاقوامی مجموعی پیداوار (جی ڈی پی) کے تناسب سے قرضوں کے حجم میں 35 پوائنٹس کے اضافہ سے یہ شرح جی ڈی پی کے 355 فیصد تک بڑھ گئی۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سال 2008ء اور 2009ء کے عالمی اقتصادی بحران کے باعث عالمی جی ڈی پی کے تناسب سے قرضوں کی شرح میں10 پوائنٹس کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا تھا۔

آئی ایم ایف نے کہا ہے کہ رواں سال کے دوران عالمی سطح پر حکومتی قرضوں کے حجم میں 10 کھرب ڈالر مزید اضافہ متوقع ہے۔