fbpx

ڈی جی خان سے حراست میں لیے گئے افراد کا موٹروے کیس سے تعلق ثابت نہیں ہوا: حکام

Motorway Abuse Case

Motorway Abuse Case

لاہور (اصل میڈیا ڈیسک) پولیس نے موٹروے زیادتی کیس کے مرکزی ملزم کی موجودگی کی اطلاع پر ایک مکان پر چھاپہ مارا جہاں سے دو افراد کو حراست میں لے لیا گیا۔

ایس پی انویسٹی گیشن ڈی جی خان فراز احمد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اطلاع ملنے پر وہ مدنی ٹاؤن میں قیام پزیر ملزمان کےگھر پہنچے جہاں مکان میں موجود 2 افراد کو حراست میں لے لیا گیا جب کہ گھر کی خواتین سے پوچھ گچھ کی جارہی ہے لیکن خواتین تعاون نہیں کررہیں۔

ایس پی انویسٹی گیشن نے بتایا کہ گھر سے ملنے والےکرایہ نامہ کے مطابق 6 روز قبل مکان کرائے پر لیا گیا، گرفتار کیے جانے والے شخص کا نام عمران احمد ہے جب کہ علاقہ مکینوں نے دوسرے ملزم کا نام عامر بتایا ہے۔

تفتیشی حکام کے مطابق زیر حراست افراد کا موٹروے زیادتی کیس سے تعلق نہیں ہے تاہم پھر بھی ملزمان کے حوالے سے مزید تفتیش کی جارہی ہے اور انہیں نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ 9ستمبر کی رات تقریباً ڈیڑھ بجے گجر پورہ کے قریب موٹر وے پر خاتون کو اس کے بچوں کے سامنے تشدد اور اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کا واقعہ پیش آیا تھا۔

ایف آئی آر کے مطابق پیٹرول ختم ہونے کے باعث خاتون کی گاڑی بند ہوگئی تھی اور وہ اپنے شوہر کے آنے کا انتظار کررہی تھی جب کہ اس نے موٹر وے پولیس سے بھی مدد طلب کی تھی تاہم اسے کوئی