fbpx

فرانس کی حزب اللہ اور اسرائیل کے درمیان کشیدگی کم کرنے کی کوشش

Foreign Ministry of France

Foreign Ministry of France

فرانس (اصل میڈیا ڈیسک) فرانس کی وزارت خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ حزب اللہ کی جانب سے اسرائیلی فوجی گاڑی کو نشانہ بنانے کے بعد جنوبی لبنان میں سرحد کے ساتھ بڑھتی کشیدگی کے تدارک کے لیے پیرس مشرق وسطی میں رابطے تیز کررہا ہے۔

وزارت خارجہ کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا ، “فرانس 25 اگست کے واقعات کے بعد سے خطے میں رابطے تیز کررہا ہے ،” وزارت خارجہ کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا۔ “عمانویل ماکروں” نے اسرائیلی وزیر اعظم بینجمن نیتن یاہو اور ایرانی صدرحسن روحانی سے خطے کی صورت حال پر مشاورت کی ہے۔

انہوں نے مزید کہا ، “ہم تمام لبنانی جماعتوں کے ساتھ مستقل رابطے میں ہیں فرانس اس سلسلے میں اپنی کوششوں کو آگے بڑھانے کے لئے پرعزم ہے اور پر امن طریقے سے حالات کو واپس لانے کے لیے سب کو اپنی ذمہ داریوں کو نبھانے کا مطالبہ کرتا ہے۔’

اسرائیل نے اعلان کیا تھا کہ اس نے اپنی سرزمین پر اینٹی ٹینک میزائل فائر کرنے کے بعد جنوبی لبنان کے علاقوں پر بمباری کی ہے ، جبکہ حزب اللہ نے لبنان کی جنوبی سرحد کے قریب واقع ایویم کے علاقے میں اسرائیلی فوج کی ایک گاڑی کو تباہ کرنے کا اعلان کیا تھا۔ حزب اللہ نے اسرائیل اسرائیل پر الزام لگایا تھا کہ اس نے بیروت کے قریب تنظیم کے مضبوط گڑھ پر دو ڈرون حملے کیے تھے جس کے نتیجے میں حزب اللہ کےدو ارکان ہلاک ہوگئے تھے۔

لبنان کے وزیر اعظم سعد حریری نے امریکا اور فرانس سے اسرائیل کے ساتھ جاری کشیدگی کو روکنے کے لیے مداخلت کریں۔