fbpx

بھارت باز نہ آیا، ایل او سی پر پھر بلااشتعال فائرنگ، 21 سالہ خاتون زخمی

Indian Forces Line of Control Firing

Indian Forces Line of Control Firing

راولپنڈی (اصل میڈیا ڈیسک) بھارتی فوج نے لائن آف کنٹرول (ایل او سی) پر سول آبادی پر بلا اشتعال فائرنگ کی ہے، فائرنگ سے 21 سالہ خاتون زخمی ہو گئی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق بھارت فورسز نے ایک بار پھر لائن آف کنٹرول پر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے چری کوٹ سیکٹر کے سریاں گاؤں میں سویلین آبادی کو نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں 21 سالہ خاتون زخمی ہو گئی جسے طبی امداد کے لیے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باؤنڈری پر بھارتی سیکیورٹی فورسز کی مسلسل اشتعال انگیزی کی وجہ سے اب تک کئی عام شہری شہید جب کہ درجنوں زخمی ہوچکے ہیں۔

بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ پر بھارتی ہائی کمیشن کے سینئر اہلکار کو دفتر خارجہ طلب کیا گیا اور ایل او سی پر فائر بندی معاہدے کی خلاف ورزی پر شدید احتجاج ریکارڈ کرایا گیا۔

دفتر خارجہ سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ایل او سی کے چری کوٹ سیکٹر میں بھارتی فوج کی بلااشتعال اور اندھا دھند فائرنگ سے 21 سالہ لائبہ ولد نقیب شدید زخمی ہوئیں۔

بیان میں نہتے شہریوں پر بھارتی فائرنگ کی مذمت کرتے ہوئے کہا گیا کہ بھارتی فائرنگ 2003 کے سیز فائر معاہدے، بین الاقوامی انسانی حقوق اور اقدار کی صریحاً خلاف ورزی ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ بھارتی اقدام سے کنٹرول لائن کے اطراف ماحول مزید کشیدہ ہو سکتا ہے اور خطے میں امن و استحکام متاثر کر سکتا ہے۔

انہوں نے زور دیتے ہوئے کہا کہ لائن آف کنٹرول اور ورکنگ باؤنڈری پر کشیدگی کو بڑھا کر بھارت، مقبوضہ جموں و کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے توجہ نہیں ہٹا سکتا۔