fbpx

اسرائیل سے معاہدے پر امارات اور بحرین کو سنگین نتائج بھگتنا ہوں گے، ایران

Hassan Rohani

Hassan Rohani

تہران (اصل میڈیا ڈیسک) ایران کے صدر حسن روحانی نے خبردار کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات اور بحرین کو اسرائیل سے معاہدے کرنے پر سنگین نتائج کا سامنا کرنا ہوگا اور اگر خطے میں امن سبوتاژ ہوا تو اس کی ذمہ داری بھی دونوں مسلم ممالک پر عائد ہو گی۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی موجودگی میں اسرائیل کے ساتھ متحدہ عرب امارات اور بحرین نے امن معاہدے پر دستخط کردیئے جس پر ایران کے صدر حسن روحانی نے دونوں مسلم ممالک کو کڑی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔

صدر حسن روحانی نے نام لیے بغیر کہا کہ کچھ اسلامی ممالک کے شہری تو فلسطینیوں کے ساتھ کھڑے ہیں لیکن ان کے حکمراں نہ تو مذہب کو اہمیت دے رہے ہیں اور نہ اپنے ہم مذہب و ہم زبان فلسطینیوں سے رشتے کا پاس رکھ رہے ہیں۔
یہ خبر پڑھیں : یو اے ای اور بحرین کا اسرائیل سے سفارتی تعلقات کا معاہدہ طے پاگیا

ایرانی صدر نے مزید کہا کہ اسرائیل روز بہ روز فلسطینیوں پر مظالم کو بڑھاتا جا رہا ہے، ایسے میں کوئی بھی دردمند کس طرح ایسے ظالم ملک سے ہاتھ ملا سکتا ہے۔ اگر خطے میں صورت حال بگڑتی ہے تو اس کے ذمہ دار بحرین اور امارات ہوں گے۔