fbpx

خیبرپختونخوا میں طبی عملے کو کورونا کے بھارتی وائرس سے ہدایت نامہ جاری

Health Workers

Health Workers

پشاور (اصل میڈیا ڈیسک) محکمہ صحت خیبرپختونخوا نے صوبے بھر کے اسپتالوں و طبی مراکز کے عملے کو کورونا کے نئے انڈین وائرس ڈیلٹا کے حوالے سے ایڈوائزری گائیڈ لائنز جاری کردی ہیں۔

ذرائع کے مطابق خیبرپختونخوا میں اس وقت بھارتی (ڈیلٹا) وائرس کے علاوہ افریقی اور برطانوی وائرس کی موجودگی کی بھی تصدیق ہوئی ہے۔ بھارتی (ڈیلٹا) وائرس ملک میں 50 سے 70 فیصد تیزی سے پھیل رہا ہے۔خ یبرپختونخوا میں بھی وائرس کی نشاندہی نے خطرے کی گھنٹی بجادی ہے۔ خصوصا طبی عملے کے لئے نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کی جانب سے ضروری گائیڈ لائنز پر عمل درآمد کو یقینی بنانے کی ہدایت کی گئی ہے۔

محکمہ صحت خیبرپختونخوا نے بھارتی (ڈیلٹا) وائرس کے پھیلاؤ کو دیکھتے ہوئے صوبے بھر کے اسپتالوں و طبی مراکز نئی گائیڈ لائنز ارسال کردی گئی ہیں۔ جس میں ہیلتھ ورکرز کو ماسک پہننے، ہاتھوں کی لازمی صفائی اور سوشل ڈسٹنسگ کی ہدایات کی گئی ہیں۔ ڈاکٹروں سمیت دیگر تمام طبی عملے کو اپنی اور اپنے خاندان والوں کی لازمی کورونا ویکسینیشن کروانے کی بھی ہدایت کی گئی ہے، اس کے علاہو کہا گیا ہے کہ جو طبی عملہ بھی بیماری محسوس کرے وہ چھٹی لے کر گھر پر رہے۔

نئی گائیڈ لائنز اس حوالے سے بھی ہیلتھ ورکرز کو الارمنگ کیا گیا ہے کہ ایسے وائرس کے کیسز میں خصوصی احتیاط کا مظاہرہ کیا جائے۔ ہیلتھ ورکرز نے کورونا ویکسینیشن کی ہو تاہم احتیاط لازمی ہے کیونکہ نئے وائرس کے حوالے سے نہیں کہا جا سکتا کہ یہ کورونا ویکسی نیشن سے کس قدر محفوظ رکھتا ہے۔

واضح رہے کہ ملک بھر میں کورونا سے 17 ہزار ہیلتھ ورکرز متاثر ہوئے ہیں جن میں اسے 3982 خیبرپختونخوا میں ہیں۔ اس عملے میں 46 فیصد ڈاکٹرز، 39 فیصد پیرامیڈیکس، اور 14 فیصد دیگر ہیلتھ ملازمین ہیں۔