fbpx

ڈہرکی ٹرین حادثے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیار

Train Accident

Train Accident

لاہور (اصل میڈیا ڈیسک) ڈہرکی ٹرین حادثے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ تیار کر لی گئی۔

ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق حادثہ اپ ٹریک کی دائیں پٹری کا ویلڈنگ جوائنٹ ٹوٹنے کے سبب ہوا، اپ ٹریک کی دائیں پٹری کا جوڑ ویلڈنگ سے جڑا ہوا تھا جو ٹوٹا ہوا پایا گیا، پٹری کا جوڑ ٹوٹنے سے ملت ایکسپریس کی 12 مسافر کوچز ڈاؤن ٹریک پر گر گئیں۔

تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ڈاؤن ٹریک پر کراچی جانے والی سرسید ایکسپریس ملت ایکسپریس کی کوچز سے ٹکرا گئی اور حادثے کے نتیجے میں سرسید ایکسپریس کا انجن اور چار کوچز پٹری سے گریں جب کہ ملت ایکسپریس کا انجن اور 6 مسافر کوچز ٹریک پر ہی رہیں، سرسید ایکسپریس کی 12 مسافر کوچز ٹریک پر ہی رہیں۔

رپورٹ کے مطابق حادثے کی شکار ٹرینوں کے انجنوں کے بلیک باکس کاڈیٹا نکالا جارہا ہے، بلیک باکس سے حاصل معلومات کو وفاقی انسپکٹرز آف ریلویز کی تحقیقات میں شامل کیا جائے گا۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ سرسید ایکسپریس راولپنڈی سے کراچی کے لیے جارہی تھی اور ملت ایکسپریس کراچی سے سرگودھا جا رہی تھی۔

واضح رہے کہ ڈہرکی ٹرین حادثے کے نتیجے میں اب تک 62 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں اور 100 سے زائد زخمی ہیں۔