fbpx

امریکا نے ایران پر معدنیات اور تعمیراتی شعبے میں‌ پابندیوں میں توسیع کردی

Mike Pompeo

Mike Pompeo

امریکا (اصل میڈیا ڈیسک) امریکی محکمہ خارجہ نے ایران میں معدنیات اور تعمیراتی شعبوں کے خلاف پابندیوں میں توسیع کا اعلان کیا۔

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق پابندیوں میں توسیع میں ایران کے جوہری ، میزائل اور فوجی پروگراموں سے متعلق 22 آرٹیکلز شامل ہیں۔

پومپیو نے یاد دلایا کہ ایران کے جوہری ، میزائل اور فوجی پروگراموں سے بین الاقوامی امن و سلامتی کو شدید خطرہ لاحق ہے۔
اسی تناظر میں‌ بات کرتے ہوئے مائیک پومپیو نے کہا کہ ایرانی پاسداران انقلاب نے ایران میں تعمیراتی شعبے کو کنٹرول میں لے رکھا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاسداران انقلاب کی تعمیراتی کمپنی اور اس کی ذیلی تنظیمیں بین الاقوامی پابندیوں کے تابع ہیں کیونکہ وہ فورو کی افزودگی سائٹ کی تعمیر میں براہ راست ملوث ہیں۔

پومپیو نے اسے ایران پر عاید کی جانے والی معدنیات سے متعلق پابندیوں “نمایاں توسیع” کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ ان پابندیوں سے اشیاء کی ایران کو نقل و حمل کرنے والوں کو بلیک لسٹ کرنے میں مدد ملے گی۔

خیال رہے کہ ایرانی پاسداران انقلاب تقریبا 100 کمپنیوں کو براہ راست چلا رہا ہے۔ ان کمنیوں‌ کی مالیت 12 ارب ڈالر سےزیادہ ہے۔ ان میں خاتم الانبیا فاؤنڈیشن کے ساتھ 800 کے قریب ذیلی کمپنیاں وابستہ ہیں۔ اس کے ذریعے ان کمپنیوں‌ نے ہزاروں سرکاری ٹھیکے حاصل کے اور انہیں اپنی کمائی کا ذریعہ بنایا۔