fbpx

وسیم اکرم کے ساتھ مانچسٹر ائیرپورٹ کے عملے کا ناروا سلوک

Wasim Akram

Wasim Akram

مانچسٹر (جیوڈیسک) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور دنیا کے بہترین فاسٹ بولر وسیم اکرم کے ساتھ مانچسٹر ائیرپورٹ عملے نے ناروا سلوک کیا جس پر سوئنگ کے سلطان نے افسوس کا اظہار کیا ہے۔

سابق کپتان وسیم اکرم نے مانچسٹر ایئرپورٹ کے عملے کے رویے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اپنے بیان میں کہا کہ مانچسٹر ائیرپورٹ پرعملے کا رویہ بہت افسوسناک تھا۔

وسیم اکرم نے بتایا کہ وہ دنیا بھر میں سفر کے دوران ذیابیطس کی انسولین ساتھ رکھتے ہیں تاہم مانچسٹر ائیرپورٹ کے عملے نے ان سے لوگوں کے سامنے بد تمیزی کے ساتھ انسولین باضابطہ پاؤچ سے باہر نکالنے کا کہا گیا۔

وسیم اکرم نے کہا کہ ان سے کہا گیا کہ انسولین کولڈ باکس سے نکال کر پلاسٹک بیگ میں رکھیں۔

سوئنگ کے سلطان نے مزد لکھا کہ میں یہ نہیں سمجھتا کہ مجھ سے دوسرے لوگوں کی نسبت مختلف سلوک کیا جانا چاہیے، میں یہ اس بات پر یقین رکھتا ہوں کہ تمام لوگوں سے روا رکھے جانے والے سلوک کا معیار بلند ہونا چاہیے، میں سمجھتا ہوں کہ ائیرپورٹ پر مناسب سیکیورٹی تدابیر اپنائی جاتی ہیں لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ ان سے گزرنے والے شخص کی تذلیل کی جائے۔

وسیم اکرم کی جانب سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر یہ مسئلہ اجاگر کرنے کے بعد مانچسٹر ائیرپورٹ کے آفشل ٹوئٹر اکاؤنٹ سے وسیم اکرم کو جواب دیا گیا جس میں انہوں نے کہا کہ ‘یہ معاملہ ہمارے علم میں لانے کا شکریہ، کیا آپ ڈائریکٹ میسج کرسکتے ہیں تاکہ ہم اس معاملے کو حل کرسکیں؟’

اس کے جواب میں وسیم اکرم نے فوری نوٹس لینے پر مانچسٹر ائیرپورٹ انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا۔