fbpx

درآمدی اسٹیل کے کنسائنمنٹس پر ٹیکس چوری کا انکشاف

Steel

Steel

کراچی (اصل میڈیا ڈیسک) ڈائریکٹوریٹ کسٹمز انٹیلی جنس اینڈانویسٹی گیشن کراچی نے ارجنٹینا، یورپین ممالک، کینیڈا، جنوبی افریقہ اور جنوبی کوریا سے درآمدہ اسٹیل کے کنسائنمنٹس کسٹم ڈیوٹی ودیگر ٹیکسوں کی چوری کا انکشاف کیاہے۔

ذرائع نے ایکسپریس کو بتایاکہ اسٹیل کے مزکورہ کنسائنمنٹس کے ایکسپورٹ پروسیسنگ زون کراچی سے تعلق رکھنے والے درآمدکنندگان اور کسٹم کلیئرنگ ایجنٹ کے خلاف جعلی دستاویزات جمع کراکے کلئیرنس حاصل کرنے اور منی لانڈرنگ ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرلیاگیاہے۔

کلیئرنگ ایجنٹ میں میسرز کاسموس ٹریڈنگ ڈیولپمنٹ جبکہ درآمدکنندگان میں میسرز حسن اسٹیل، میسرزاسٹیل ویڑن، میسرزرائل امپیکس، میسرززبیر اسٹیل اور میسرز بلوچستان انجینئرنگ ورکس شامل ہیں۔
ذرائع نے بتایا کہ مقدمہ درج کرنے کے بعد ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں تاکہ مقدمہ میں نامزد ملزمان کے خلاف قانونی کارروائی کاعمل شروع کی جاسکے۔

درآمدکنندہ میسرزحسن اسٹیل کی جانب سے ارجنٹینا، یورپین یونین ممالک، کینیڈا، ساؤتھ افریقہ، ساؤتھ کوریا سے اسٹیل کے سات کنسائمنٹس سال 2017اور سال 2018 میں درآمدکیے گئے تھے جس کے لیے بینک اسلامی پاکستان لمیٹڈ سے الگ الگ لیٹر آف کریڈٹس (ایل سیز) کھلوائی گئی تھیں اور درآمدی دستاویزات متعلقہ شپنگ ایجنٹ سے وصول کیے گئے۔

متعلقہ بینک کی جانب سے اس بات کی تصدیق کی گئی ہے مزکقرہ کنسائمنٹس میسرز حسن اسٹیل نے درآمدکرکے اس کی ادائیگیاں بھی کیں لیکن کمپنی کی جانب سے درآمدی دستاویزات میں ردوبدل کرکے میسرز اسٹیل ویڑن اورمیسرز رائل امپیکس کی ملی بھگت سے فراڈ کے ذریعے اپنے نام سے کنسائمنس کی گڈزڈیکلریشن کلیئرنگ ایجنٹ میسرزکاسموس ٹریڈنگ نے محکمہ کسٹمز میں جعلی دستاویزات جمع کرائے اور کنسائمنٹس ایکسپورٹ پروسیسنگ زون کے بجائے میسرز زبیراسٹیل اور میسرز بلوچستان انجینئرنگ کو منتقل کرکے مقامی مارکیٹ فرخت کیے گئے۔