fbpx

سام سنگ اگلے برس فولڈیبل فون کے سستے ماڈل پیش کرے گا

Samsung

Samsung

جنوبی کوریا: عالمی کورونا وبا کے تناظر میں اسمارٹ فون کمپنیوں نے اپنی نئی حکمتِ عملی وضع کی ہے اور اب اسمارٹ فون کے معاملات پر نظررکھنے والی ویب سائٹ اور اس کے تجزیہ کاروں نے کہا ہے کہ 2021 میں سام سنگ اپنی توجہ زیڈ سیریز کے فولڈیبل فون پر رکھے گا جس کے لیے وہ تہہ ہوجانے والے ان فون کی قیمتوں میں کمی کرکے اسے صارفین کی بڑی تعداد تک پہنچانا چاہتا ہے۔

سام سنگ کے اندرونی حلقوں نے کہا ہے کہ اب بھی زیڈ سیریز اور فولڈ ہونے والے فون کی گنجائش اور طلب موجود ہےلیکن اس کی ہوش ربا قیمت اس میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے۔ اب 2021 میں سام سنگ گیلکسی زیڈ فولڈ تھری اور زیڈ فلپ تھری کے نئے ماڈل پیش کرے گی اور کہا جارہا ہے کہ انہیں صارفین کے لیے کم خرچ بنایا جائے گا۔

ای ٹی ویب سائٹ کے مطابق اگلے سال کی وسط تک گیلکسی چار فولڈیبل ماڈل پیش کرے گا لیکن شاید یہ اگست اور ستمبر میں ہی فروخت کے لیے پیش کئے جاسکیں اس دوران سام سنگ شاید اپنی نوٹ سیریز کو فروخت کرنے کی کوشش کرے گا۔

یہ بھی کہا جارہا ہے کہ زیڈ فولڈ تھری میں میں پہلی مرتبہ ایس فون کی سہولت شامل ہوگی اور اسی بنا پر تجزیہ کاروں نے کہا ہے کہ شاید اب نوٹ سیریز قصہ پارینہ بن جائے گا۔ اس کے علاوہ زیڈ فولڈ کی قیمت مروجہ اچھے اسمارٹ فون ماڈل کی طرح کم رکھی جائے گی۔ یعنی اس کی قیمت گوگل پکسل اور آئی فون کے قریب ہی ہوگی۔

لیکن اس سے بھی پہلے 2020 سے ہی فولڈ ای اور فولڈ لائٹ کی خبریں بھی گردش کرتی رہی ہیں اسی لیے اگلا سال سام سنگ اسمارٹ فون صارفین کے لئے بہت سے نئے ماڈل کے ساتھ طلوع ہوگا جن میں ہرفولڈیبل فون کسی طرح بھی نظرانداز نہیں کئے جاسکتے۔

واضح رہے کہ گیلکسی زیڈ فولڈ ٹو کو بار بار کھولنے اور بند کرنے سے اسکرین پر نشان ظاہر ہونے کی شکایات عام تھیں اور اتنے قیمتی فون کے ساتھ صارفین اس طرح کا فون لینے کے حق میں نہ تھے۔ یہی وجہ ہے کہ عوامی رائے یہ ہے کہ فولڈیبل فون کی قیمت ایک ہزار ڈالر سے زائد نہیں ہونی چاہیے۔