fbpx

سعودی معیشت نے کووِڈ-19 کے مضمرات سے نمٹنے کا ثبوت فراہم کر دیا: ولی عہد شہزادہ محمد

 Prince Muhammad bin Salman

Prince Muhammad bin Salman

سعودی عرب (اصل میڈیا ڈیسک) سعودی عرب کی معیشت نے کرونا وائرس کی وَبا کے مضمرات سے نمٹنے کی صلاحیت کا ثبوت فراہم کردیا ہے۔یہ بات سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے مملکت کے 2021ء کے سالانہ میزانیے کے اعلان کے موقع پر کہی ہے۔

سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) کے مطابق ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا کہ ’’کرونا وائرس کی وَبا کے معاشی سرگرمیوں پر اثرات کو کم سے کم کرنے کے لیے مالیاتی اوراقتصادی اقدامات کیے گئے ہیں۔اس بحران سے بڑی احتیاط اورمؤثرطریقے سے نمٹا گیا ہے۔اس کے نتیجے میں اس وَبا کے سعودی معیشت پر کم سے کم اثرات مرتب ہوئے ہیں۔‘‘

شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا کہ ’’احتیاطی تدابیر اور معاشی سرگرمیوں کی بتدریج بحالی میں بروقت ایک توازن قائم کیا گیا ہے۔سعودی عرب نے کرونا وائرس کی وبا کو پھیلنے سے روکنے کے لیےاحتیاطی اقدامات کیے گئے ہیں جن کے نتیجے میں انسانی زندگی کے تحفظ کو یقینی بنایا جاسکا ہے۔‘‘

سعودی عرب کی وزارتِ خزانہ نے منگل کے روز آیندہ مالی سال کا بجٹ پیش کیا ہے اور یہ پیشین گوئی کی ہے کہ 2020ء کا بجٹ خسارہ بڑھ کر 79 ارب ڈالر تک ہوجائے گا۔

وزارت خزانہ نے سالانہ میزانیے کے اجراء کے موقع پر ایک بیان میں کہا ہے:’’یہ توقع کی جاتی ہے کہ 2020ء کے اختتام تک بجٹ خسارہ بڑھ کر قریباً 298 ارب ریال ہوجائے گا۔ہم اس کو 2021ء تک کم کرکے 141 ارب ریال (37 ارب 60 کروڑ ڈالر) تک لانا چاہتے ہیں۔‘‘