fbpx

یورپ کو اتحاد کی ضرورت ہے، پوپ فرانسس

Pope Francis

Pope Francis

یورپ (اصل میڈیا ڈیسک) پوپ فرانسس نے یورپ پر زور دیا ہے کہ ’بھائی چارے پر مبنی اتحاد‘ کو دوبارہ سے قائم کرنے کی کوشش کریں۔ نئے کورونا وائرس کے بعد پیدا ہونے والے اقتصادی مسائل کے مشترکہ ردعمل پر یورپی ممالک شدید قسم کے اختلافات کا شکار ہیں۔

یورپی یونین کی سربراہی سمٹ سے قبل پوپ فرانسس نے کہا کہ دراصل یہی اقدار یورپ کے بنیادی اصولوں میں شامل ہیں۔ انہوں نے کہ اس مخصوص وقت میں یورپی اقوام میں اتحاد کی زیادہ ضرورت ہے۔ یورپی یونین کے رہنما جمعرات کے دن ویڈیو کانفرنس کریں گے۔

عالمی سطح پر اس نئے کورونا وائرس کی عالمی وبا کے شکار افراد کی تعداد پچیس لاکھ کے قریب پہنچ گئی ہے جبکہ ایک لاکھ تریسٹھ ہزار افراد مارے جا چکے ہیں۔ یورپی ملک اسپین میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران مزید چار سو پینتیس افراد نئے کورونا وائرس کے باعث ہلاک ہو گئے۔ اس یورپی ملک کی وزارت صحت نے بدھ کے دن بتایا کہ یوں ہلاکتوں کی مجموعی تعداد اکیس ہزار سات سو سے زائد ہو گئی ہے۔ تاہم اس ملک میں گزشتہ کچھ دنوں سے شرح اموات میں کمی ہوئی ہے۔ بتایا گیا ہے کہ اس وقت اسپین میں اس عالمی وبا سے متاثرہ افراد کی تعداد دو لاکھ آٹھ ہزار سے زائد ہو چکی ہے۔

جرمنی میں کووڈ انیس میں متاثرہ افراد کی تعداد میں گزشتہ روز کے دوران بائیس سو کا مزید اضافہ نوٹ کیا گیا ہے۔ یوں اس ملک میں متاثرہ افراد کی تعداد ایک لاکھ پینتالیس ہزار سے زائد ہو گئی ہے۔ رابرٹ کوخ انسٹی ٹیوٹ نے بدھ کے دن بتایا کہ گزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران مزید دو سو اکیاسی افراد ہلاک ہوئے۔ یوں جرمنی میں مجموعی ہلاکتوں کی تعداد چار ہزار آٹھ سو سے زائد ہو گئی ہے۔

امریکا کے ہیلتھ چیف رابرٹ ریڈ فورڈ نے خبردار کیا ہے کہ نئے کورونا وائرس کی دوسری لہر سے ہوشیار رہنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکا کے لیے یہ زیادہ تباہ کن ہو گا کیونکہ کورونا وائرس ممکنہ طور پر موسمی نزلہ زکام کے سیزن میں آئے گا۔ انہوں نے امریکیوں سے کہا کہ وہ اس حوالے سے پہلے سے ہی تیار رہیں اور ضروری طبی ہدایات پر عمل کریں۔ امریکا میں اس وائرس میں مبتلا ہونے والے افراد کی تعداد آٹھ لاکھ ہو چکی ہے جبکہ چوالیس ہزار آٹھ سو سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں، جو کسی بھی ملک میں ہلاکتوں کی سب سے زیادہ تعداد بنتی ہے۔

فلپائن کے حکام نے بتایا ہے کہ ایک ہزار سے زائد ہیلتھ ورکرز نئے کورونا وائرس میں مبتلا ہو چکے ہیں۔ ان میں سے 422 ڈاکٹر اور 386 نرسز بھی شامل ہیں۔ بدھ کے دن محکمہ صحت نے تازہ اعدادوشمار جاری کرتے ہوئے بتایا کہ ان میں چھبیس ہیلتھ ورکرز ہلاک ہو چکے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ ملکی شعبہ صحت عالمی ادارہ صحت کی گائیڈ لائنز کے مطابق حفاظتی اقدامات اختیار کرنے کی کوشش میں ہے۔ فلپائن میں اس وقت کورونا وائرس میں مبتلا ہونے والے افراد کی مجموعی تعداد چھ ہزار سات سے زائد ہو چکی ہے۔